Showing posts with label Psychology. Show all posts
Showing posts with label Psychology. Show all posts

Monday, July 10, 2017

راجہ اندر


کتاب کیا ہے پوری الف لیلیٰ ہے، ایک کے بعد ایک عشق جیسے کوئی ریس لگی ہو، یا مطلوبہ قسطیں پوری ہوجانے پر کوئی تمغہ ءِ حسن کار کردگی ملنا ہو۔ حال یہ کہ خود تو کم از کم ایک درجن سے زیادہ خواتین سے "خالص اور سُچا"  عشق فرمایا، جن میں اپنے سے بڑی عمر کی خواتین بھی تھیں اور ایک آٹھویں کلاس میں پڑھنے والی بچی بھی، مسلمان خواتین بھی تھیں، ہندو، عیسائی بھی۔ کسی کو نہیں بخشا۔  ہر خاتون بس انتظار میں تھی کہ محترم ان پر نظرکرم فرمائیں اور خاتون ان کا بستر گرم کرنے کو پلنگ پر بچھ جائیں یا ان کی چونچ میں چونچ ڈال دیں۔

Tuesday, April 18, 2017

ترقی ءِ معکوس

انسانوں کی طرح شہروں اور مکانات کی بھی نسلیں ہوتی ہیں ۔ ضمیر جعفری

موجودہ مکان ہمارے گھر کی پانچویں پشت ہے۔ جو پچھلی پانچ دہائیوں میں ارتقاء کی منزلیں طے کرتے کرتے ایک چٹائی کی جھونپڑی سے تین منزلہ مکان میں تبدیل ہوگیا ہے ۔

پہلی پشت میں گھر ایک جھونپڑی اور ایک بڑے سارے مشترکہ صحن پر مشتمل تھا۔ جس کا آنگن سارے محلے کا مشترکہ صحن تھا ساری خواتین گھر کے مختلف کام نپٹاتے ہوئے ایک دوسرے سے گپیں بھی لگاتی جاتی تھیں اور سب کے بچے بھی اسی "آنگن" میں ایک دوسرے کی نظروں کے سامنے اچھلتے کودتے، گرتے پڑتے ، چوٹیں کھاتے اور روتے گاتے رہتے۔ سردیوں میں جھونپڑی کے اندر اور گرمی میں جھونپڑیوں کے باہر بستر ڈال کر رات بسر کی جاتی۔

Friday, April 15, 2016

ایڈجسٹ منٹ

بھائی کی شادی کے چند دن بعد کا ذکر ہے ، ایک دن میں آفس سے واپس گھر پہنچی تو بھابھی کی آنکھیں رو رو کر موٹی موٹی ہوئی تھیں۔ تفتیش کی تو پتا چلا کہ بھابھی کے جہیز کا ایک گلاس پتہ نہیں کیسے برتنوں کی الماری میں شیلف پر سے پھسلا اورگر کر چور چور ہوگیا ۔ الماری بند کی بند تھی ۔ تین مزید گلاس لڑھک کر ایسی پوزیشن میں تھے کہ شیشے کا دروازہ کھولتے ہی زمین پر آرہتے۔ سو ایک گلاس کے سوگ میں اور تین گلاسوں کی مزید شہادت کے صدمے میں صبح سے نہ کھانا کھایا ہے نہ پانی پیا ہے، بس چپ چاپ آنسو بہائے چلی جارہی ہے۔

Thursday, April 14, 2016

دل کی تسلیاں

بندہ گزر جاتا ہے، جانے کہاں جاتا ہے، یہ وہی جانتا ہے یا اللہ تعالیٰ ۔ ہم تو بس اندازے لگاتے رہ جاتے ہیں کہ وہ عالم برزخ مین گیا ہے ، عالم برزخ کیسا ہے، کیا ہے، کہاں ہے سنی سنائی باتیں ہیں ۔ باقی جو جسد خاکی رہ جاتا ہے اسے ہم قبر کے سپرد کر آتے ہیں اور سمجھتے ہیں کہ اب وہ یہاں ہے۔

Friday, April 8, 2016

Funny Five :P


ہمارا فیس بک پر پانچ خواتین بلکہ لڑکیوں کا ایک گروپ ہے ہم پانچوں ایک دوسرے کو گزشتہ 5 سال سے جانتے ہیں ہماری ملاقات فیس بک کے ذریعے ہوئی ، ایک دوسرے کو جانا ، پہچانا، ایک دوسرے سے ملے، پانچوں ایک دوسرے سے بالکل مختلف شخصیات، پانچوں الگ الگ شہروں میں رہتے ہیں ، ہمارے درمیان" ذو اضعاف اقل "یعنی مشترکہ خصوصیت یہ ہے کہ ہم پانچوں تھوڑے سے پاگل ہیں۔

Tuesday, March 8, 2016

کراچی بڑی دووووور ہے

"آنکھ اوجھل ، پہاڑ اوجھل" محاورہ تو سنا تو تھا لیکن محسوس حال ہی میں کیا۔ گزشتہ دنوں ہمیں اسلام آباد اور لاہور میں تقریباً ہفتہ ہفتہ گزارنے کا شرف حاصل ہوا۔ ان دو پھیروں میں ہم متعدد دوستوں سے ملے، نئے دوست بنائے، کچھ سے دعا سلام بنائی۔ لازمی بات ہے کہ جب آپ کسی کے گھر جاتے ہیں یا کسی سے ملتے ہیں، پرانی دوستی کی تجدید کرتے ہیں یا نئی دوستی کی ابتداء کرتے ہیں تو انہیں اپنے گھریا شہر آنے کے لیے انوائیٹ کرتے ہیں۔ 
کاپی رائیٹس: نسرین غوری